ماہنامہ الخیر

ماہنامہ الخیر جامعہ خیرالمدارس ملتان کا ترجمان اور ایک علمی ،تحقیقی، فکری اور اصلاحی رسالہ ہے۔ جس کا اجراء محرم الحرام 1404 مطابق اکتوبر 1983 میں ہوا۔

یہ رسالہ اپنے یوم تاسیس سے لے کر تاحال بحمد اللہ باقاعدگی سے شائع ہورہا ہے۔ اس میں نامور اہل واہل قلم حضرات کی بلند پایہ نگارشات شائع ہوتی ہیں۔ جو اپنے تنوع تحقیق اور متانت کی بناء پر علمی وعوامی حلقوں میں یکساں مقبول ہیں

اس رسالے کے بنیادی مقاصد میں دین نبوی کی خدمت ، فقہ حنفی کی اشاعت، اور علمائے دیوبند کے مسلک حق کی حفاظت ، لادینی نظریات کے خلاف علمی وقلمی جہاد اور  تنقیص واہانت یاتوہین وتذلیل کے بغیر مخاطب کی ہمدردی ، اور دینی خیرخواہی کے پیش نظر مثبت اور تعمیری تنقید شامل ہے۔ 

اس کے مدیر اعلی جامعہ خیرالمدارس ملتان کے متہمم وشیخ الحدیث حضرت مولانا محمد حنیف جالندھری دامت برکاتہم ہیں۔ اور مدیر حضرت مولانا محمد ازہر صاحب ہیں۔ ویسے تو اس رسالے کے تمام مضامین اسلامی اقدار کے فروغ اور فکری رہنمائی میں اپنا کردار ادا کرنے کی وجہ سے پسند کی نگاہ سے دیکھے جاتے ہیں لیکن حضرت مولانا محمد ازہر مدظلہ کے رواں وشستہ وشائستہ قلم سے لکھا گیا اداریہ خصوصیت کے ساتھ ذوق وشوق سے پڑھاجاتاہے۔ اور حالات حاضرہ پر بے لاگ تبصرہ وتجزیہ کی وجہ سے دینی وعلمی حلقوں میں الخیر کے اداریے کا باقاعدہ انتظار کیاجاتاہے۔ نیز ملکی وبین الاقوامی معاملات پر مدیر اعلی کے فکر انگیز مضامین بھی بطور خاص پسند کیے جاتے ہیں۔

اس رسالے کے جامعہ خیرالمدارس نمبر، مولانا اکاڑوی نمبر، مفتی عبد الستار نمبر، اور شیخ الحدیث مولانا محمد صدیق نمبر علمی حلقوں سے بطور خاص خراج تحسین حاصل کرچکے ہیں۔ 

کتبہ محمد زبیر معاون مدیر الخیر

Menu